مباحث (185)

  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

سیاست ایک بے رحم کھیل ہے۔ یہ تخت اور تختہ کا کھیل ہے۔ اس میں ہونے کو آئیں تو سو غلطیاں بھی معاف ہو جاتی ہیں اور پکڑی جائیں تو ایک غلطی بھی تخت کو تختہ میں بدل دیتی ہے۔ اس لیے یہ جوش نہیں ہوش کا کھیل ہے۔ یہ جذبات کا نہیں عقل و دانش کا کھیل ہے۔ یہ نہ سچ ہے نہ جھوٹ ۔ نہ مکمل سچ چل سکتا ہے نہ مکمل جھوٹ چل سکتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

ملک میں جہاں جمہوریت کے حوالے سے سوالات خدشات موجود ہیں۔ وہاں سیاسی قیادت بھی شدید خدشات اور غیر یقینی کی صوتحال سے دو چار ہے۔ میاں نواز شریف نا اہل ہو چکے ہیں۔ انہوں نے اپنی نا اہلی کے بعد اپنی و اپسی کے لیے بہت کوشش کی ہے لیکن شدید کوشش کے باوجود واپسی کے راستے نہیں کھل رہے۔ وہ اپنی جماعت کے دوبارہ سربراہ تو بن گئے ہیں لیکن پھر بھی معاملات پر ہر گزرتے دن کے ساتھ ان کا کنٹرول کمزور ہو تا جا رہا ہے۔ وہ اپنے آپ کو گیم میں ان رکھنے کی جتنی بھی کوشش کر رہے ہیں، اس کے منفی نتائج ہی سامنے آرہے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 6 دن پہلے 

ملک میں عدم استحکام پانامہ کی وجہ سے سے چل رہا ہے۔ لیکن لگتا ہے کہ اب فریقین کو بھی انداذہ ہو تا جارہا ہے کہ وہ معاملات کو زیادہ عرصہ اس طرح نہیں چلا سکتے۔ یہ عدم استحکام ہمارے لئے زہر قاتل ہے۔ ہم لمبے لمبے میچ کھیلنے کے متحمل نہیں ہو سکتے۔ اس لئے اب گیم کو ختم کرنے میں ہی ملک کی بہتری ہے۔ آرمی چیف نے کراچی میں اپنے خطاب میں ملک کی معیشت کے حوالہ سے خطرہ کی گھنٹیاں بجا دی ہیں۔  انہوں نے برملا کہا ہے کہ ملک کی معاشی حالت ٹھیک نہیں ہے۔ قرضے آسمان کو چھو رہے ہیں۔ ان کا مقدمہ سادہ ہے کہ فوج نے ملک کا امن و امان ٹھیک کر دیا ہے لیکن سیاسی قیادت ملک کی معیشت ٹھیک نہیں کر سکی ہے۔ بات یہیں ختم نہیں ہو ئی بلکہ اگلے دن ڈی جی آئی اسی پی آر نے آرمی چیف کی تقریر کے فالو اپ میں کہا ہے کہ ملک کی معاشی حالت ٹھیک نہیں۔ لہذا اس پر مل بیٹھ کر بات چیت کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 12 2017

مجھے کیپٹن صفدر سے اتفاق بھی ہے اور اختلاف بھی۔ بلا شبہ نبی اکرم آخری نبی ہیں ۔ اور ان کے بعد کوئی معبود نہیں۔ وہ آخری نبی ہیں، یہ ہمارے عقیدہ کی بنیاد ہے۔ لیکن اس ضمن میں فوج اور دیگر اداروں میں بھرتیوں اور ترقیوں کے حوالہ سے قانون سازی درست نہیں۔ جہاں تک پارلیمنٹ کا تعلق ہے تو پاکستان کی پارلیمنٹ میں مسلمانوں اور غیر مسلمانوں کی نشستیں الگ ہیں۔ اقلیتوں کے لئے پارلیمنٹ میں مخصوص نشستیں ان کے حق نمائندگی کو محفوظ بنانے کے لئے مختص کی گئی ہیں۔ اس طرح مسلم نشستوں پر مسلمان اور اقلیتی نشستوں پر اقلیت ہی منتخب ہو سکتے ہیں۔ تاہم جہاں تک دیگر شعبوں کا تعلق ہے وہاں بھرتی اور ترقی کا معیار مذہب نہیں میرٹ اور ٹیلنٹ ہے۔ 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 09 2017

شاہد خاقان عباسی کیا کر رہے ہیں۔ ایسا لگ رہا ہے کہ وہ دو کشتیوں کے سوار ہیں۔ وہ ایک ٹکٹ میں دو مزے کے خواہاں ہیں۔ وہ بیک وقت وکٹ کے دونوں طرف کھیل رہے ہیں۔ ایک طرف وہ اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ بھی ہنی مون منا رہے ہیں، دوسری طرف نواز شریف کے ساتھ عہد وفا کا بھی کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 05 2017

احسن اقبال کے واقعہ کے نتائج ابھی سامنے نہیں آئے لیکن حقیقت یہی ہے نتائج پر کام شروع ہے۔ احتساب عدالت میں رینجرز کا آنا کوئی اتنا بڑا مسئلہ نہیں جتنا بڑا بنا دیا گیا ہے۔ رینجرز تو پاکستان میں ہرجگہ موجود ہے۔ کراچی میں رینجرز ہے، کے پی کے میں بھی رینجرز ہے بلوچستان میں بھی رینجرز ہے۔ پنجاب میں بھی رینجرز آپریشن کر رہے ہیں۔ محرم میں رینجرز۔ الیکشن میں رینجرز۔ عید پر رینجرز۔ دہشت گردی کے خلاف آپریشن میں رینجرز۔ غرض ہماری سول حکومت ہر موقع پر خود ہی رینجرز کو بلاتی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 03 2017

ملک ایسے نہیں چل سکتا جیسا چل رہا ہے۔ اس طرح کی محاذ آرائی کا یہ ملک متحمل نہیں ہو سکتا۔ لیکن کیا محاذ آرائی ابتدائی سکرپٹ کا حصہ ہے۔ یا سکرپٹ لکھنے والوں کو انداذہ ہی نہیں تھا کہ محاذ آرائی اتنی بڑھ جائے گی۔ کیا سارا سکرپٹ یہ سامنے رکھ کر لکھا گیا تھا کہ نواز شریف آسانی سے ملک سے باہر چلے جائیں گے۔ کیا کسی کو اندازہ تھا کہ نواز شریف اس طرح مزاحمت کریں گے اور ان کی جماعت ان کے ساتھ اس طرح کھڑی ہو جائے گی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 28 ستمبر 2017

نواز شریف نے احتساب عدالت میں مقدمات کا سامنا کرنے کا فیصلہ کر کے کھیل ہی بدل دیا ہے۔ اب تک اطلاعات یہی ہیں کہ ریفرنسز کا سامنا کرنے کا فیصلہ کر چکے ہیں۔ ان کے فیصلے کے بعد ان کو گرفتار نہ کرنے کا فیصلہ ان کی سیاسی فتح ہے۔ شاید یہ انداذہ ہو گیا ہے کہ ان کو گرفتار کرنے کا فائدہ کم اور نقصان زیادہ ہے۔ سیاست مضبوط اعصاب کا کھیل ہے ۔ جیت اور ہار کا دارومدار اعصاب قابو میں رکھنے پر ہی ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 ستمبر 2017

مجھے سمجھ نہیں آرہی کہ ہم پاکستان کو بطور ریاست کیسا بنانا چاہتے ہیں۔ چلیں یہ مان لیتے ہیں کہ انتہا پسند اس کو انتہا پسند ملک بنانا چاہتے ہیں لیکن سوال یہ ہے کہ لبرل اور پروگریسو اس کو کیسا بنانا چاہتے ہیں۔ یہ بات تو سمجھ آتی ہے کہ انتہا پسند اپنے اندر داخلے کے دروزے بند کر دیتے ہیں لیکن یہ بات سمجھ نہیں آتی لبرل اور پروگریسو اپنے اندر داخلے کے دروازے کیوں بند کر لیتے ہیں۔ انتہا پسند ڈائیلاگ کے خلاف بات سمجھ میں آتی ہے لیکن لبرل ڈائیلاگ کے کیوں خلاف ہیں۔ وہ کسی کی بات نہیں سنتے۔  لبرل بھی تو مخالفت میں منطق اور دلیل کو چھوڑ دیتے ہیں۔ اس کا کیا کریں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 21 ستمبر 2017

چوہدری پرویز الٰہی کے چہرہ پر مسکراہٹ اور خوشی نظر آرہی تھی۔ میری ان سے کافی عرصہ بعد ملاقات تھی۔ ملتے ہی انہوں نے پوائنٹ اسکور کیا کہ تم تو پچھلی ملاقات میں مجھے کہہ رہے تھے کہ تمہیں نواز شریف جاتے نظر نہیں آرہے ۔ اب کیا کہتے ہو۔ میں نے کہا کہ جنرل راحیل شریف کی ریٹائرمنٹ  کے بعد میرا نہیں خیال تھا کہ نواز شریف اس طرح نا اہل ہو جائیں گے۔

مزید پڑھیں

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...